Shopping for porkخنزیر کا گوشت خریدنا اور اسے غیر مسلموں کو کھلانا جائز نہیں ہے۔

خنزیر کا گوشت خریدنا اور اسے غیر مسلموں کو کھلانا جائز نہیں ہے۔


Shopping for pork and it is not permissible to feed non-Muslims.
Quest
I سوال

ایسے شخص کا کیا حکم ہے جو اپنی رقم سے تھوڑا سا خنزیر کا گوشت خرید کر غیر مسلموں کو کھلائے؟ اگر کسی نے یہ کام صرف ایک بار کیا ہو تو اس کا کیا حکم ہے؟on

What is the order of a person who buys little pork from his cash to feed non-Muslims? What is the order for anybody to try this as soon as?

جواب کا متن

الحمد للہ:

اس نے جو کام کیا ہے وہ حرام ہے، اس کے حرام ہونے میں کوئی شک نہیں ہے، جیسے کہ جابر بن عبد اللہ رضی اللہ عنہما کہتے ہیں کہ انہوں نے رسول اللہ صلی اللہ علیہ و سلم کو فتح مکہ کے سال مکہ میں فرماتے ہوئے سنا: (بیشک اللہ اور اس کا رسول شراب، مردار، خنزیر اور بتوں کی خرید و فروخت کو حرام قرار  دیتے ہیں) اس حدیث کو امام بخاری: (2236) اور مسلم : (1581) نے  روایت کیا ہے۔
اب چاہے وہ اسے اہل کتاب کو کھلائے یا کتوں کو ڈالے یا کسی کو بھی نہ کھلائے؛ ہر صورت میں خنزیر کا گوشت خریدنا یا بیچنا حرام ہے، اس کی قیمت بھی حرام ہے۔
Solution text

Praise be to Allaah


What he has executed is forbidden, there is no question that it's miles forbidden for him to be forbidden, as Jabir ibn'Allah (can also Allaah be pleased with him) said, "He said the Messenger of Allaah (peace and blessings of Allaah be upon him) listening to: (certainly Allah and His Apostle forbid the sale of alcohol, useless, pigs and idols). This Hadith is narrated by using Imam Bukhari: (2236) and Muslim: (1581).

Now whether they feed it or provide puppies to the holy e-book or do no longer feed each person; each time it's far forbidden to shop for orange meat or promote it, it's also prohibited.

ابن منذر رحمہ اللہ کہتے ہیں:
"اہل علم کا اس بات پر اجماع ہے کہ سور کی خرید و فروخت حرام ہے" ختم شد
"الأوسط" (10/20)
ابن بطال رحمہ اللہ کہتے ہیں:
"علمائے کرام کا اس بات پر اجماع ہے کہ سور کی خرید و فروخت حرام ہے" ختم شد
"شرح صحیح البخاری" (6/344)
جبکہ سور کھانا یہ الگ سے گناہ ہے، سور کھانے کی حرمت کتاب اللہ، سنت رسول اللہ اور مسلمانوں کے اجماع سے معلوم شدہ ہے۔

Ibn Ma'awari said:

"it's miles permissible for the students to recognize that the sale and selling of the pig is unlawful."
"الأوسط" (10/20)


Ibn Batal says:

"the scholars say that it is forbidden to shop for and promote the pig."
"price right Alakhari" (6/344)

Even as ingesting pigs is a separate sin, it's miles recognised from the supplication of the Sunnah, the e book of Allah, Sunnah Rasulullah and the Muslims.
اب جس نے بھی یہ کام کیا ، چاہے وہ ایک بار کیا ہو یا زیادہ بار، تو اس پر لازمی ہے کہ اللہ تعالی سے سچی توبہ کرے اور جو کچھ بھی اس سے سر زد ہوا ہے اس پر بخشش مانگے، آئندہ ایسی حرکت مت کرے، نہ ہی کسی کے سامنے اللہ کے دین کی پابندی میں سستی کا شکار ہو، کسی انسان کو خوش کرنے کے لئے دین سے دوری مت اپنائے، کوئی بھی ایسا کام کر کے کسی کے قریب ہونے کی چاہت نہ رکھے جس میں رحمن کی نافرمانی ہو۔
نیز یہ صحیح ہے کہ وہ اگر کسی مسلمان یا کافر کو کھانا کھلانا چاہے تو اسے حلال اور پاکیزہ چیز کھلائے، اسے حلال اور پاکیزہ چیز پلائے، اللہ کی نافرمانی میں اس کا تعاون مت کرے، چنانچہ کسی کو حرام چیز کھلا پلا کر خود اللہ کی نافرمانی بھی نہ کرے۔
واللہ اعلم
Now whoever has accomplished this, whether or not or not she or he as soon as has executed, then it's far compulsory to pay off the truth with Allaah and ask forgiveness for anything is headed with the aid of him, do not act like this subsequent. No one is low-priced in the restriction of God's religion in the front of all people, do now not permit any man pass thru the faith to please, nobody need to do whatever to be close to all people in which he's disobedient to the maximum Merciful. .

It is real that if he wants to feed a Muslim or an infidel, then he must feed it lawful and purified, provide it lawful and easy things, do now not guide him in disobedience of Allah Do not disobey.

The Prophet

0 comments:

Note: Only a member of this blog may post a comment.

Match